Go to ...
Muttahida Quami Movement on YouTubeRSS Feed

ایم کیوایم پاکستان کاشعبہ خواتین ہماری طاقت ہے جس نے ہمیشہ ایم کیوایم پاکستان کوہرکڑے وقت میں سنبھالاہے،سربراہ ایم کیوایم پاکستان


ایم کیوایم پاکستان کاشعبہ خواتین ہماری طاقت ہے جس نے ہمیشہ ایم کیوایم پاکستان کوہرکڑے وقت میں سنبھالاہے،سربراہ ایم کیوایم پاکستان 
2018ء کے عام انتخابات میں خواتین کو براہ راست انتخابات میں کھڑا کریں گے، سربراہ ایم کیو ایم پاکستان ڈاکٹر فاروق ستار 
عام انتخابات سے قبل خواتین کا عظیم الشان جلسہ منعقد کرئینگے اور اپنے ہی ماضی کے جلسوں کاریکارڈ توڑیں گے، ڈاکٹر فاروق ستار 
شعبہ خواتین میں شامل خواتین فولادی عزم و حوصلہ اور فولادی اعصاب کی مالک ہیں، ڈپٹی کنونیر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی 
اگر ہمیں اپنے ملک اور قوم کو اہمیت دینی ہے تو پہلے ہمیں اپنی خواتین کو اہمیت دینی ہوگی، ڈپٹی کنونیر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی 
شعبہ خواتین کے اس اجلاس میں آج وہ خواتین بھی موجود ہیں کہ جن کے پیارے شہید و اسیر ہیں اور وہ خواتین بھی موجود ہیں کہ جنہوں نے خود اسیری کی صعوبتیں جھلیں ہیں، رکن رابطہ کمیٹی و قومی اسمبلی کشور زہرہ 
ایم کیو ایم میں خواتین کو جو وقار، عزت اور کردار دیا گیا ہے اسکی مثال کسی سیاسی جماعت میں نہیں ملتی، رکن رابطہ کمیٹی و سندھ اسمبلی ہیرسوہو 
ہمارے اتحاد و اتفاق ہی کے بدولت 22 اگست کو ایم کیو ایم پاکستان اپنے کٹھن ترین دور سے گزرنے میں کامیاب رہی اور یوں ڈوبتی ہوئی ایم کیو ایم پاکستان کو بچانا ممکن ہوسکا، انچارج شعبہ خواتین سکندر خاتون 
ایم کیو ایم پاکستان شعبہ خواتین کے زیر اہتمام ایم کیو ایم پاکستان کے عارضی مرکز واقع بہادرآباد سے متصل گراؤنڈ میں منعقدہ خواتین کے جنرل ورکرز اجلاس سے مقررین کا خطاب
کراچی ۔۔۔ 06، جنوری 2017ء
متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے شعبہ خواتین کے زیر اہتمام ایم کیو ایم پاکستان کے عارضی مرکز واقع بہادرآباد سے متصل گراؤنڈ میں خواتین کے جنرل ورکرز اجلاس کا انعقاد کیا گیا۔ اجلاس میں ایم کیوایم پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار، سینئر ڈپٹی کنونیر عامرخان، ڈپٹی کنونیرز ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی، کامران ٹیسوری و اراکین رابطہ کمیٹی سمیت کراچی کے مختلف ٹاؤنز کی ذمہ داران و کارکنان خواتین کی بڑی تعداد موجود تھی۔ اس موقع پر اجلاس کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے سربراہ ایم کیو ایم پاکستان ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ ایم کیو ایم پاکستان کا شعبہ خواتین ہماری طاقت ہے جس نے ہمیشہ ایم کیو ایم پاکستان کو ہر کڑے وقت میں سنبھالا ہے۔ 1992ء کے آپریشن کے دوران جب ایم کیو ایم ڈوبنے لگی تو شعبہ خواتین کی ہماری مائیں، بہنیں اور بیٹیاں ہی تھی جنہوں نے اس وقت ایم کیو ایم پاکستان کو ڈوبنے سے بچایا اور 22 اگست کو جب ایک بار پھر ایم کیو ایم پاکستان پر کڑا وقت آیا اور ہم نے 23 اگست کو فیصلہ کیا تو تب بھی شعبہ خواتین یہی باجیاں تھی جنہوں نے ہمیں ہمارا ساتھ دیا اور ایک بار پھر ایم کیو ایم پاکستان کو تاریکیوں میں ڈوبنے سے بچایا۔ ڈاکٹر فاروق ستار نے مزید کہا کہ ہمارا مقابلہ دنیا کی ان ترقی یافتہ ممالک سے ہے جو سراٹھا کر چلتی ہیں کیونکہ ہمیں دنیا میں ان سے زیادہ اعلیٰ اور باوقار مقام حاصل کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے عہد کیا ہے کہ 2018ء کے عام انتخابات میں خواتین کو براہ راست انتخابات میں کھڑا کریں گے۔ قیام پاکستان کی تحریک بھی تب ہی کامیاب ہوئی جب قائد اعظم محمد علی جناحؒ نے برصغیر کی خواتین کو تحریک پاکستان میں اہم اور کلیدی کردار فراہم کیا۔ انہوں نے کہا کہ 2018ء کے عام انتخابات سے قبل ہم خواتین کا عظیم الشان جلسہ منعقد کریں گے اور اپنے ہی ماضی کے جلسوں کاریکارڈ توڑیں گے۔ ایم کیو ایم پاکستان کے ڈپٹی کنونیر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایم کیو ایم پاکستان کے شعبہ خواتین میں شامل خواتین فولادی عزم و حوصلہ اور فولادی اعصاب کی مالک ہیں۔ 92ء میں جب ایم کیو ایم پاکستان ڈوپ رہی تھی تو سب سے پہلے جو سر اٹھے وہ خواتین ہی کے تھے۔ انہوں نے مزید کہا کہ آج ایم کیو ایم پاکستان کے شعبہ خواتین کی تنظیم نو باجیوں میں فکر نو اور حوصلہ دئیگی۔ اگر ہمیں اپنے ملک اور قوم کو اہمیت دینی ہے تو پہلے ہمیں اپنی خواتین کو اہمیت دینی ہوگی اور انہیں آگے لانا ہوگا۔ ایم کیو ایم پاکستان رابطہ کمیٹی و قومی اسمبلی کی رکن کشور زہرہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شعبہ خواتین کے اس اجلاس میں آج وہ خواتین بھی موجود ہیں کہ جن کے پیارے شہید و اسیر ہیں اور وہ خواتین بھی موجود ہیں کہ جنہوں نے خود اسیری کی صعوبتیں جھلیں ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایم کیو ایم پاکستان ایسی پرعزم باجیوں کی احسان مند ہے اور ان کے عزم و حوصلہ پر انہیں زبردست خراج تحسین پیش کرتی ہے۔ ایم کیو ایم پاکستان رابطہ کمیٹی و سندھ اسمبلی کی رکن ہیرسوہو نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایم کیو ایم پاکستان میں خواتین کو جو وقار، عزت اور کردار دیا گیا ہے اس کی مثال پاکستان کی کسی سیاسی جماعت میں نہیں ملتی۔ آج جو جو باجیاں ذمہ داریوں پر فائز ہوئی ہیں یہ انکی ذمہ داری ہے کہ وہ گراؤنڈ پر کارکنان اور عوام کے ساتھ روابط کو مضبوط بنائے۔ ایم کیو ایم پاکستان شعبہ خواتین کی انچارج سکندر خاتون نے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے اتحاد و اتفاق ہی کے بدولت 22 اگست کو ایم کیو ایم پاکستان اپنے کٹھن ترین دور سے گزرنے میں کامیاب رہی اور یوں ڈوبتی ہوئی ایم کیو ایم پاکستان کو بچانا ممکن ہوسکا۔ انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم پاکستان ملک کی واحد سیاسی جماعت ہے کہ جس میں خواتین کو ہر شعبہ میں کلیدی کردار دیا گیا ہے۔ دریں اثناء ایم کیو ایم پاکستان شعبہ خواتین کی ٹاؤنز کی سطح پر تنظیم نو کی گئی اور ذمہ داران کے ناموں کے اعلان کئے گئے۔
*****

Tags: ,

More Stories From Feature News