Go to ...
Muttahida Quami Movement on YouTubeRSS Feed

شہرکراچی میں بہت سارے گھروں اورتعمیرات کومسمارکیاجارہا ہے یہ سب کچھ عدالت عظمیٰ کے فیصلے کی آڑمیں اپنے سیاسی مقاصدپورے کرنے کیلئے کیاجارہاہیں، سربراہ ایم کیوایم پاکستان ڈاکٹرفاروق ستار


شہرکراچی میں بہت سارے گھروں اورتعمیرات کومسمارکیاجارہا ہے یہ سب کچھ عدالت عظمیٰ کے فیصلے کی آڑمیں اپنے سیاسی مقاصدپورے کرنے کیلئے کیاجارہاہیں، سربراہ ایم کیوایم پاکستان ڈاکٹرفاروق ستار
اگر تجاوزارت کا خاتمہ ضروری ہے تو متاثرین کو بھی کہیں نہ کہیں متبادل جگہ فراہم کیا جانا چاہئے، سربراہ ایم کیو ایم پاکستان ڈاکٹر فاروق ستار
ایم کیو ایم پاکستان ہر قسم کی ، تجاوزات اورقبضے کی روز اول سے خلاف ہے اور ہر ایسے عمل کی سختی سے مذمت کرتے ہیں، سربراہ ایم کیو ایم پاکستان ڈاکٹر فاروق ستار
قبضہ مافیا کے خلاف حکومتی و ریاستی اداروں ا ور عدالت عظمیٰ سے یہ درخواست کرتے ہیں کہ ان کے خلاف سخت سے سخت کاروائی کی جا ئے ، سربراہ ایم کیو ایم پاکستان ڈاکٹر فاروق ستار
قبضہ مافیا کے جرائم کی سزا غریبوں کو عام لوگوں کو ملے تو ظاہر ہے ہمیں وہاں اپنا کردار ادا کرنا ہوگا، ڈاکٹر فاروق ستار
شہری اداروں کے افسران کی ملی بھگت سے بڑی بڑی زمینوں پر قبضے ہوتے ہیں اور وہ عام لوگوں کو یہ زمینیں بیچتے ہیں جو اپنی زندگی کی جمع پونجی لگا کر گھر بناتے ہیں، ڈاکٹر فاروق ستار
ہم نے فیصلہ کیا ہے کہ ہم ان متاثرین کے سیاسی وکیل بنیں گے اور ہر سطح پر آواز بلند کرئینگے اور انہیں قانونی معاونت بھی فر اہم کر یں گے ، ڈاکٹر فاروق ستار
22 دسمبر سے ہم ان متاثرہ علاقوں میں اپنے کیمپس لگائیں گے اور متا ثرین سے رابطہ کر یں گے ،فاروق ستار 
23 دسمبر کو ہم عوامی عدالت سے رجو ع کر تے ہو ئے حکو مت سندھ کی بے حسی پر یس کلب پر احتجاج کر یں گے ،فاروق ستار 
ہماری یہ جدوجہد قطعاً عدلیہ کے فیصلوں کے خلاف نہیں بلکہ حکومت کی بے حسی کے خلاف ہے، ڈاکٹر فاروق ستار
اوکھائی میمن جماعت کی ایک بستی مسمار کی گئی اس پر احتجاج ہوا جبکہ یہ چائنا کٹنگ نہیں تھی ہم اس کی مذمت کرتے ہیں، ڈاکٹر فاروق ستار
عوام کو ایم کیو ایم پاکستان کو ووٹ دینے کی سزا نہ دی جائے، ڈاکٹر فاروق ستار
ڈاکٹر فاروق ستار نے صحافی کے سوال کا جو اب دیتے ہو ئے کہا کہ ہم باہم شیر وشکر ہیں اور اختلا فات جمہو ریت کا حسن ہو تے ہیں ہما رے درمیان کو ئی اختلا ف نہیں ،ڈاکٹر محمد فاروق ستار 
سربراہ ایم کیو ایم پاکستان ڈاکٹر فاروق کی سینئر ڈپٹی کنونیر عامر خان ، ڈپٹی کنونیرز و اراکین رابطہ کمیٹی کے ہمراہ ایم کیو ایم پاکستان کے عارضی مرکز واقع بہادرآباد پر پرہجوم پریس کانفرنس سے خطاب 
کراچی ۔۔۔ 21، دسمبر 2017ء
متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار کی سینئر ڈپٹی کنونیر عامر خان ، ڈپٹی کنونیرز و اراکین رابطہ کمیٹی کے ہمراہ ایم کیو ایم پاکستان کے عارضی مرکز واقع بہادرآباد پر پرہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شہر کراچی میں بہت سارے گھروں اور تعمیرات کو مسمار کیا جارہا ہے جوکہ سب کچھ عدالت عظمیٰ کے فیصلے کی نتیجے میں کیا جارہا ہے۔ہم عدالت کے ہر فیصلے کا احترام کرتے ہیں لیکن یہ بھی ہماری ذمہ داری ہے کہ اس فیصلہ کے نتیجے میں اگر کوئی سنگین انسانی مسئلہ پیدا ہورہا ہو تو سپریم کورٹ یا عدالت عظمیٰ سے یہ استدعا کریں کہ وہ اپنے اس فیصلے کو اس حد تک ریویو کریں گے اگر ہزاروں افراد اپنے گھروں سے دربدر ہونگے تو یہ لوگ کہاں جائینگے۔ انہوں نے کہا کہ اگر تجاوزارت کو خالی کیا جانا ہے تو متاثرین کو کہیں نہ کہیں متبادل جگہ فراہم کیا جانا چاہئے۔ ایم کیو ایم پاکستان قبضے ، تجاوزات اور یہ جو ناجائز زمینوں کو ہڑپ کیا جاتا ہے ہم روز اول سے اس کے خلاف ہیں اور ہر ایسے عمل کی سختی سے مذمت کرتے ہیں اور قبضہ مافیا کے خلاف حکومتی و ریاستی اداروں ا ور عدالت عظمیٰ سے یہ درخواست کرتے ہیں کہ ان کے خلاف سخت سے سخت کاروائی ہونی چاہئے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہم قبضہ مافیا کے جرائم کی سزا غریبوں کو عام لوگوں کو ملے تو ظاہر ہے ہمیں وہاں اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔ عام لوگ تو خود ان قبضہ مافیا کے جرائم کے متاثرین ہیں۔ شہری اداروں کے افسران کی ملی بھگت سے بڑی بڑی زمینوں پر قبضے ہوتے ہیں اور وہ عام لوگوں کو وہ زمینیں بیچتے ہیں جو اپنی زندگی کی جمع پونجی لگا کر گھر بناتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے یہ فیصلہ کیا ہے کہ ہم ان متاثرین کے سیاسی وکیل بھی بنے گے اور ہر سطح پر ان کیلئے آواز بلند کرئینگے اور ان کیلئے وکیلوں کا انتظام بھی کرئینگے۔ کل 22 دسمبر سے ہم ان متاثرہ علاقوں میں اپنے کیمپس لگا کر انہیں قانونی معاونت فراہم کرئینگے۔ پڑسوں 23 دسمبر کو ہم ان متاثرین کی حمایت میں عوام کی عدالت میں پیش کرنے کیلئے ایک احتجاجی مظاہرہ کرئینگے اور یہ مظاہرہ کسی طور بھی سپریم کورٹ کے فیصلے کے خلاف نہیں لیکن چونکہ اس فیصلے سے 15 ہزار خاندانوں کی بربادی ہورہی ہے اس لئے یہ مظاہرہ حکومت سندھ کی بے حسی کے خلاف ہوگا۔ ڈاکٹر فاروق ستار نے مزید کہا کہ ان میں سے بہت ساری زمینیں کے ایم سی اور کے ڈی اے کے افسران کی جانب سے ریگولرائز کئے گئے تھے۔ گوٹھ آباد اسکیم میں بھی نئے نئے گوٹھ جو بنے وہ بھی ریگولراز کئے جائے۔ متاثرین کو زمین کی رقم اور تعمیرات کا خرچہ فراہم کیا جائے۔ سپریم کورٹ ان متاثرہ خاندانوں کو بلا کر ان کا بھی مؤقف سنے۔ انہوں نے کہا کہ کل دوپہر 02 بجے کراچی پریس کلب پر مظاہرہ کرئینگے۔ میڈیا کے دوست بھی اس انسانی مسئلہ کو حل کرنے میں بھی اپنا کردار ادا کریں۔ یہ تو چائنا کٹنگ کی بات ہوگئی لیکن کراچی میں باقی 90 فیصد زمینوں پر ہونے والے قبضے کو بھی صوبائی حکومت اور بورڈ آف رینیو اور کے ڈی اے کے سربراہی میں جو آج بھی قبضہ ہورہا ہے اس کی روک تھام بھی کی جائے۔ ڈاکٹر فاروق ستار نے مزید کہا کہ اوکھائی میمن جماعت کی ایک بستی جو جس طرح مسمار کیا گیا اس پر احتجاج ہوا جبکہ یہ چائنا کٹنگ نہیں تھا 25 سالوں سے قائم تھی۔ عوام کو ایم کیو ایم پاکستان کو ووٹ دینے کی سزا نہ دی جائے۔ سپریم کورٹ سے درخواست کرتا ہوں کہ وہ دیکھے کہیں ان کے فیصلے کی آڑ میں کوئی اپنے سیاسی مقاصد تو پورے نہیں کررہا۔ سربراہ ایم کیو ایم پاکستان ڈاکٹر فاروق ستار نے سوالات کے جواب دیتے ہوئے کہا کہ ہم باہمی شیروشکر ہیں، ہم ایک ہیں اور ہمارے درمیان کوئی اخلافات نہیں لہٰذا ایم کیو ایم پاکستان میں کوئی چائنا کٹنگ نہیں ہوسکتی۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایم کیو ایم پاکستان میں جرائم پیشہ افراد کی کوئی جگہ نہیں ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ہم اپنے مسائل حل کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں اور اختلاف جمہوریت کا حسن ہے۔ میڈیا ہاؤسز اور پرنٹ میڈیا سے درخواست ہے کہ وہ بغیر تصدیق کے کوئی خبر نشر یا شائع نہ کریں۔

Tags: ,

More Stories From Feature News