Go to ...
Muttahida Quami Movement on YouTubeRSS Feed

ڈاکٹرمحمدفاروق ستارکی سربراہی میں ریلی کاٹنڈوآدم پہنچنے پرعوام نے شانداراستقبال پھولوں کی پتیاں نچھاوراورپرجوش نعرے لگاکرکیا


ڈاکٹرمحمدفاروق ستارکی سربراہی میں ریلی کاٹنڈوآدم پہنچنے پرعوام نے شانداراستقبال پھولوں کی پتیاں نچھاوراورپرجوش نعرے لگاکرکیا 
8 دسمبر کو اکبری گراؤنڈ حیدرآباد میں ہونے والا جلسہ ماضی کے تمام جلسوں کا ریکارڈ توڑنے جارہا ہے، ڈاکٹر محمد فاروق ستار 
ارباب اقتدار و اختیار کو اب اپنا وقت ضائع نہیں کرنا چاہئے اور ہمیں کھلے دل سے قبول کرنا چاہئے، ڈاکٹر محمد فاروق ستار 
ہمیں بھی قومی اور معاشی ترقی کیلئے ہمارے فنڈز فراہم کرنے چاہئے، ڈاکٹر محمد فاروق ستار 
اب صوبے کو اس کی آبادی کے مطابق حصہ ملنا چاہئے اور یہ بندر بانٹ بند ہونی چاہئے کہ ٹیکس ہم دیں اور وہ کراچی تو کجا لاڑکانہ اور دادو تک میں بھی نہ لگے ، ڈاکٹر محمد فاروق ستار 
ہم چھوٹے زمینداروں، کسانوں اور بہنوں کو بااختیار کریں گے ، یہاں گھریلو صنعتیں لگائیں گے، ڈاکٹر محمد فاروق ستار 
ٹنڈوآدم محمد ی چوک پر حیدرآباد اکبری گراؤنڈ میں 8دسمبر کو ہونے والے جلسہ عام کی عوامی رابطہ مہم کے سلسلے میں بڑے اجتماع سے خطاب 
ٹنڈو آدم ۔۔۔5، دسمبر2017ء
متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر محمد فاروق ستار کی جانب سے 8 دسمبر کو حیدرآباد کے اکبری گراؤنڈ میں ہونے والے جلسہ عام کے سلسلے میں بھر پور عوامی رابطہ مہم جاری ہے۔ عوامی رابطہ مہم کے تیسرے اور آخری روز ڈاکٹر محمد فاروق ستار انڈس ہوٹل حیدرآباد میں دوپہر کو صحافیوں کو پریس بریفنگ دینے کے بعد ٹنڈو آدم شہر کیلئے روانہ ہوئے۔ ڈاکٹر محمد فاورق ستار جیسے ہی ٹنڈو آدم شہر میں داخل ہوئے تو ان کا پرتپاک استقبال کیا گیا اور پھولوں کی پتیاں نچھاور کی گئیں اور پرجوش نعرے لگائے گئے۔ اس موقع پر رابطہ کمیٹی کے ڈپٹی کنوینر و میئر کراچی وسیم اختر، رابطہ کمیٹی کے ارکان خواجہ اظہار الحسن، خواجہ سہیل منصور اور ٹنڈو آدم ڈسٹرکٹ کے ذمہ داران بھی موجود تھے۔ ڈاکٹر محمد فاروق ستار نے ٹنڈو آدم کے محمدی چوک پر ایک بڑے عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج یہ واضح طور پر نظر آرہا ہے کہ 8 دسمبر کو اکبری گراؤنڈ حیدرآباد میں ہونے والا جلسہ ماضی کے تمام جلسوں کا ریکارڈ توڑنے جارہا ہے ، ہمارا مقابلہ مخالفین سے نہیں بلکہ ہمارا مقابلہ یہ ہے کہ اکبری گراؤنڈ حیدرآباد میں پہلا قافلہ میر پور خاص ، ٹنڈو جام ، ٹنڈو الہیار ، شہداد پور یا نواب شاہ کا پہنچے گا۔ انہوں نے کہاکہ غریب سندھی، پنجابی، بلوچی، سرائیکی اور قلیتوں کے لوگ ایم کیو ایم پاکستان کے ساتھ ہیں اور وہ ظلم کے نظام سے نجات چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 40 سال سے ایم کیو ایم میں دھڑے بنانے کی کوشش ہورہی ہے لیکن اس کے باوجود ایم کیو ایم پاکستان کے بینک میں کوئی دھڑا نہیں بنا ہے۔ انہوں نے واضح الفاظ میں کہا کہ ارباب اقتدار و اختیار کو اب اپنا وقت ضائع نہیں کرنا چاہئے اور ہمیں کھلے دل سے قبول کرنا چاہئے۔ ہمیں بھی قومی اور معاشی ترقی کیلئے ہمارے فنڈز فراہم کئے جانے چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ کوٹہ سسٹم ختم ہوگیا ہے تو اس پر عمل نہیں ہونا چاہئے ، اب صوبے کو اس کی آبادی کے مطابق حصہ ملنا چاہئے اور یہ بندر بانٹ کا سلسلہ اب بند ہونا چاہئے کہ ٹیکس ہم دیں اور وہ کراچی تو کجا لاڑکانہ اور دادو تک میں بھی نہ لگے۔ انہوں نے کہا کہ ہم چھوٹے زمینداروں، کسانوں اور بہنوں کو بااختیار کریں گے، یہاں گھریلو صنعتیں لگائیں گے اور لوگوں کو روزگار مہیا کریں گے۔ انہوں نے ٹنڈو آدم کے ذمہ داران و کارکنان کو بڑے اجتماع کے انعقاد پر زبردست خراج تحسین پیش کیا اور کہا کہ 8 دسمبر کو حیدرآباد اکبری گراؤنڈ کا جلسہ ایک تاریخ رقم کرے گا جو ظلم و ستم کی شب کا خاتمہ کرے گا۔
*****

Tags: ,

More Stories From 8 December Hyderabad Jalsa