Go to ...
Muttahida Quami Movement on YouTubeRSS Feed

متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے سربراہ ڈاکٹرمحمدفاروق ستارنے فردوس شاپنگ سینٹرلیاقت آبادنمبر 10میں پرہجوم پریس بریفنگ


متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے سربراہ ڈاکٹرمحمدفاروق ستارنے فردوس شاپنگ سینٹرلیاقت آبادنمبر 10میں پرہجوم پریس بریفنگ
ہمارا جذبہ جواں ہے ہمارے ساتھیوں نے بہت محنت کی ہے اور انشاللہ اس جلسے سے ماضی کے ریکارڈ توڑدیں گے
؂ اب سازش یہ ہورہی ہے کہ ہماری صوبائی و قومی اسمبلی کی نشستیں بھی کم کردی جائیں ،تعلیم روزگار اور ملازمتوں پر نقب زنی کی گئی ہے
5نومبر کا جلسہ 2018ء کیلئے پیش بندی اور یادگار ثابت ہوگا اور انشاللہ حقوق کے تحفظ کی جنگ میں یہ احتجاجی مظاہر ہ سنگ میل ثابت ہوگا

کراچی۔۔۔۔03نمبر 2017ء
متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر محمدفاروق ستار نے فردوس شاپنگ سینٹر لیاقت آباد نمبر 10 میں پر ہجوم پریس بریفنگ کرتے ہو ئے کہا ہے کہ ایم کیوایم پاکستان کو جلسے کی اجازت صرف تین دن پہلے دی گئی ہے جبکہ ہم نے پندرہ دن پہلے درخواست دی تھی ہماری تجویز کردہ جگہ کے بجائے ہمیں لیاقت آباد 10 نمبر پر ہمیں احتجاجی جلسہ کرنے کی اجازت دی گئی۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا جذبہ جواں ہے ہمارے ساتھیوں نے بہت محنت کی ہے اور انشاء اللہ اس جلسے سے ماضی کے تمام ریکارڈ توڑ دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ 1986ء میں بھی ہم نے ریکارڈ قائم کئے تھے آج بھی عوام میں وہی جذبہ ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ماضی میں بھی مردم شمار ی میں افراد غائب کردےئے گئے اور اس مرتبہ بھی ہمیں ہمیشہ کی طرح کم گنا گیا ہے تفصیلی حقائق اور اعدادو شمار جلسے میں عوام کے سامنے کھلی عدالت لگا کر پیش کرینگے۔ ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ پہلے ہی مردم شماری میں شہری سندھ کے عوام کی تعداد کم کردی گئی ہے اور اب سازش یہ ہورہی ہے کہ ہماری صوبائی و قومی اسمبلی کی نشستیں بھی کم کردی جائیں۔ انہوں نے کہا کہ تعلیم، روزگار اور ملازمتوں پر نقب زنی کی گئی ہے، اندرون سندھ کے دہی علاقوں میں بھی زیادتی ہوئی ہے، ہم انکے ساتھ بھی اظہار یکجہتی کرتے ہیں ہمارے حقوق غصب کئے جارہے ہیں اور دیوار سے لگانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ سربراہ ایم کیو ایم پاکستان ڈاکٹر فاروق ستار نے کوٹہ سسٹم پر سخت تنقید کرتے ہوئے متعلقہ حکام سے اس کالے قانون کے خاتمے کا مطالبہ بھی کیا۔ انہوں نے کہا کہ جس ملک میں آبادی کم کی جارہی ہو وہ کیسے ترقی کرئیگا؟ کراچی کو دیوار سے لگانے کا مطلب پورے ملک کو امتحان میں ڈالنا ہے کراچی چلے گا تو پاکستان چلے گا، ہم اللہ کی رحمت سے اپنے عوام میں 1986ء والا جذبہ بیدار کرنے میں کامیاب ہوگئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 5 نومبر کا جلسہ 2018ء کیلئے پیش بندی اور انشاللہ حقوق کے تحفظ کی جنگ میں یہ احتجاجی مظاہر ہ ایک سنگ میل ثابت ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر فاروق ستار نے مزید کہا کہ سندھ کے شہری علاقوں کے عوام بالخصوص کراچی کے عوام سے اپیل کی کہ 5 نومبر کو لیاقت آباد پہنچ کر احتجاجی اور گنتی دونوں کرائیں انہوں نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ ضلع غربی اور وسطی میں ہمارے استقبالیہ کیمپ لگانے نہیں دیئے گئے ،انہوں نے کہا کہ ہم مردم شماری کو نامنظور کرتے ہیں او لائے عمل 5نمبر کے جلسے میں دیں گے۔
*****

Tags: ,

More Stories From Feature News