Go to ...
Muttahida Quami Movement on YouTubeRSS Feed

سربراہ ایم کیوایم پاکستان ڈاکٹرفاروق ستارکی وقافی حکومت کی جانب سے پرنٹ میڈیاریگولیٹری آتھارٹی آرڈننس 2017 کی منظوری اوراجراء کی تیاریوں پرگہری تشویش کا اظہار


سربراہ ایم کیوایم پاکستان ڈاکٹرفاروق ستارکی وقافی حکومت کی جانب سے پرنٹ میڈیاریگولیٹری آتھارٹی آرڈننس 2017 کی منظوری اوراجراء کی تیاریوں پرگہری تشویش کا اظہار 
مجوزہ قانون یا آرڈننس پرنٹ میڈیا پر قدغن لگانے کے مترادف ہے اور یہ قانون آئین میں دی گئی اظہار رائے کی روح سے بھی متصادم ہے، ڈاکٹر فاروق ستار
میڈیا کے حوالے سے کسی قسم کی قانون سازی سے قبل اے پی این ایس، سی پی این ای،پی ایف یوجے،کے یوجے سمیت تمام صحافتی انجمنوں کو اعتماد میں لیا جائے اور اس کے ساتھ ساتھ سیاسی جماعتوں کو بھی اس مشاورت کا حصہ بنایا جائے، ڈاکٹر فاروق ستار
ایم کیو ایم پاکستان ذرائع ابلاغ پر لگنے والی ہر پابندی کی پرزور مذمت کرتی ہے اور ہمیشہ سے ہم جمہوری روایات اور اعلیٰ اخلاقی اقدار کے حامی رہے ہیں، ڈاکٹر فاروق ستار
کراچی ۔۔۔ 11، ستمبر 2017ء
متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار نے وقافی حکومت کی جانب سے پرنٹ میڈیا ریگولیٹری آتھارٹی آرڈننس 2017 کی منظوری اور اجراء کی تیاریوں پر اپنی گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ایک بیان میں کہا کہ مجوزہ قانون یا آرڈننس پرنٹ میڈیا پر قدغن لگانے کے مترادف ہے اور یہ قانون آئین میں دی گئی اظہار رائے کی روح سے بھی متصادم ہے۔ اطلاعات یہ ہیں کہ حکومت 12 اراکین پر مشتمل ایک آتھارٹی قائم کررہی ہے جس میں 8 اراکین کو حکومت نامزد کریں گی جبکہ 4 اراکین ذرائع ابلاغ کی انجمنیں نامزد کریں گی اور یہ آتھارٹی پرنٹ میڈیا پر قدغن لگانے جس میں جرمانے اور پابندی کی سزا شامل ہے عائد کرنے کی مجاز ہوگی۔ ڈاکٹر فاروق ستار نے وفاقی حکومت پر زور دیا کہ میڈیا کے حوالے سے کسی قسم کی قانون سازی سے قبل اے پی این ایس، سی پی این ای،پی ایف یوجے،کے یوجے سمیت تمام صحافتی انجمنوں کو اعتماد میں لیا جائے اور اس کے ساتھ ساتھ سیاسی جماعتوں کو بھی اس مشاورت کا حصہ بنایا جائے۔ بصورت دیگر یہ عمل آمرانہ تصور کیا جائیگا۔ پاکستان کا آئین تمام شہریوں کو مساوی طور پر آزادئ اظہار رائے کا حق دیتا ہے۔ پاکستان کے ذرائع ابلاغ کے اداروں اور نمائندوں نے بے شمار قربانیاں دیں ہیں لہٰذا ان پر آزادئ اظہار کی پابندی قابل مذمت عمل ہے۔ متحدہ قومی موومنٹ پاکستان ذرائع ابلاغ پر لگنے والی ہر پابندی کی پرزور مذمت کرتی ہے اور ہمیشہ سے ہم جمہوری روایات اور اعلیٰ اخلاقی اقدار کے حامی رہے ہیں۔

Tags: ,

More Stories From Urdu News