Go to ...
Muttahida Quami Movement on YouTubeRSS Feed

مسلم لیگ ن کے اعلیٰ سطحی وفد کی ایم کیوایم(پاکستان)کے سربراہ ڈاکٹرمحمدفاروق ستار،سینئرڈپٹی کنوینرعامرخان اورڈپٹی کنوینرڈاکٹرخالد مقبول سے عارضی مرکزبہادرآباد میں ملاقات


مسلم لیگ ن کے اعلیٰ سطحی وفد کی ایم کیوایم(پاکستان)کے سربراہ ڈاکٹرمحمدفاروق ستار،سینئرڈپٹی کنوینرعامرخان اورڈپٹی کنوینرڈاکٹرخالد مقبول سے عارضی مرکزبہادرآباد میں ملاقات 
ملاقات میں مسلم لیگ ن کے وفد نے عبوری وزیراعظم شاہد خان عباسی کی پارلیمنٹ میں حمایت کیلئے درخواست کی 
ہم رابطہ کمیٹی کا اجلاس کرکے فیصلہ کریں گے اس کے بعد بتائیں گے ، ہم سمجھتے ہیں کہ یہ سیاسی عمل ہے اور اسے جاری رہنا چاہئے، ڈاکٹر محمد فاروق ستار 
ہمارا دفتر 200گز پر ہے لیکن ہمارا دل ہزاروں گز پر ہے، ہمیں موقع ملے تو سندھ ا،پاکستان کو خوبصورت بنا سکتے ہیں ، ڈاکٹر محمد فاروق ستار 
مسلم لیگ ن کے وفد نے ہمیں یقین دہانیاں کرائی ہیں انہیں ہم نے سنا ، ہم نے بھی اپنے گلے شکوے کئے ہیں اور دل کے پھپھوڑے پھوڑے ہیں ، ڈاکٹر محمد فاروق ستار 
ہم تو آج بھی لاشیں اٹھا رہے ہیں ، چھاپے اور گرفتاریوں کابلاجواز سلسلہ بھی جاری ہے ، پھر ہمارے لاپتہ ساتھیوں کا معاملہ بھی وہیں ہے ، ڈاکٹر محمد فاروق ستار
پیپلزپارٹی ہے اور مسلم لیگ ن کی دوستی کی وجہ سے ہمیں بھگتنا پڑا ، ڈاکٹر محمد فاروق ستار 
مسلم لیگ ن کو سندھ حکومت کے احتساب کے عمل سے بھاگنے کو دیکھنا چاہئے ، ڈاکٹر محمد فاروق ستار 
بنیادی اصلاحات کیلئے قومی ایجنڈا وضع ہونا چاہئے ، کرپشن کے 179میگا مقدمات ہیں ان پر بھی آگے بڑھنا چاہئے، ڈاکٹر محمد فاروق ستار 
ہم نے فیصلہ کیا ہے کہ انشاء اللہ آئندہ مل کر چلیں گے اور پاکستان کے معاملات کو آگے لیکر چلیں گے ، مسلم لیگ ن رہنما شیخ آفتاب 
، ہم ایم کیوایم پاکستان کے ساتھ مل کر صوبے کو اور بہتربنائیں گے اورناانصافیوں کا ازالہ کریں گے ، گورنر سندھ زبیر عمر عارضی مرکز بہادر آباد میں ملاقات کے بعد میڈیا نمائندگان سے گفتگو 
کراچی ۔۔۔30، جولائی 2017ء
پاکستان مسلم لیگ کے ایک اعلیٰ سطحی وفد نے اتوار کی شب متحدہ قومی موومنٹ (پاکستان ) کے عارضی مرکز واقع بہادر آباد میں ایم کیوایم کے سربراہ ڈاکٹر محمد فارو ق ستار ، سینئر ڈپٹی کوینر عامر خان اور ڈپٹی کنوینر ڈاکٹر خالد مقبول سے ملاقات کی اور مسلم لیگ ن کے عبوری وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی پارلیمنٹ میں حمایت کیلئے درخواست کی ۔ مسلم لیگ ن کے وفد میں گورنر سندھ محمد زبیر عمر ، سابق وفاقی وزرا ء شیخ آفتاب ، عبد القادر بلوچ ، میر حاصل بزنجو اور دیگر رہنما بھی شامل تھے اس موقع پر ایم کیوایم کی رابطہ کمیٹی کے اراکین فیصل سبزواری ، شبیر قائم خانہ ، خواجہ سہیل منصور ، امین الحق ،عبد الوسیم ، سندھ اسمبلی میں ایم کیوایم کے پارلیمانی لیڈر سید سردار احمد، ڈپٹی میئر کراچی ارشد وہرا ، رکن قومی اسمبلی شیخ صلاح الدین بھی موجود تھے ۔ ملاقات تقریبا ڈیڑھ گھنٹے تک جاری رہی جس میں ملک کی مجموعی سیاسی ، سماجی اور اقتصادی صورتحال سمیت باہمی دلچسپی کے مختلف امور بھی زیر بحث آئے ۔ مسلم لیگ ن کا وفد جب عارضی مرکز بہادرآباد پہنچا تو رابطہ کمیٹی کے اراکین نے ان کا استقبال کیا۔ ملاقات کے بعد میڈیا کے نمائندگان کو پریس بریفنگ دیتے ہوئے سربراہ ایم کیوایم (پاکستان ) ڈاکٹر محمد فاروق ستار نے کہا کہ مسلم لیگ ن کا ایک وفد بہادرآباد ایم کیوایم کے آفس پر تشریف لایا ہے ، ہم نے مہمانوں کا پرتپاک استقبال کیا انہیں خوش آمدید کہا یہ ہمارے 23اگست کے فیصلے کے بعد مسلم لیگ ن کا پہلا وفد ہے جو ایم کیوایم کے مرکز آیا ہے ، ہمارے اس دفتر کی مہمانوں نے تعریف کی اور کہا خوبصورت ہے ، ہمارا دفتر 200گز پر ہے لیکن ہمارا دل ہزاروں گز پر ہے اگر ہمیں موقع ملے تو سندھ اورپاکستان کو خوبصورت بنا سکتے ہیں ، مہمانوں کے آنے کا مقصد عبوری وزیراعظم کیلئے ووٹ کا معاملہ ہے ، شاہد خاقان عباسی ان کے امیدوار ہیں جب موقع مرحلہ آئے گا اس کے بعد دیکھیں گے ، مسلم لیگ ن کے وفد نے یقین دہانیاں کرائی ہیں انہیں ہم نے سنا ، ہم نے بھی اپنے گلے شکوے کئے ہیں اور دل کے پھپھوڑے پھوڑے ہیں ، طویل عرصے کے بعد ہمیں موقع ملا کہ مسلم لیگ ن کا وفد آئے لیکن مہمان بن کر آئے ہیں ہم ان سے اور گلے شکوے کرتے ، ان سے کہا ہے کہ آج آپ آئے ہیں اور آج ہی ہمارے سینئرساتھی محمد راشد کو شہید کیا گیا ہے جو ہر دلعزیز عوام کے منتخب نمائند ہ تھے، ہم تو آج بھی لاشیں اٹھا رہے ہیں ، چھاپے اور گرفتاریوں کابلاجواز سلسلہ بھی جاری ہے ، پھر ہمارے لاپتہ ساتھیوں کا معاملہ بھی وہیں ہے ، ایک دفتر ہمیں بہادرآباد کا اور پی ایس 114میں الیکشن ہوا وہاں ملا ہے لیکن دیگر جائز دفاتر ہمیں نہیں ملے ہیں ، چھاپے گرفتاریوں ، تشدد ، شہادیوں کا سلسلہ چل رہا ہوں اور ایم این ایز اور ایم پی ایز ان کی سلامتی کا مسئلہ بھی ہے کیونکہ وہ غیر محفوظ ہیں تو ہم کیسے اپنی سیاسی ذمہ داری پوری کریں جیسی سیاسی آزادی دیگر جماعتوں کو حاصل ہے لیکن ہمیں نہیں حاصل ہے اس پر ہمارے ووٹ بنک پر کیا اثر پڑے گا ، ہمیں تنہا چھوڑ دیا گیا اور دیورا سے لگا دیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ گورنرسندھ زبیر عمر سے ویسے بھی رابطہ ہے انہوں نے صرف ہماری باتوں کو سنا ہی نہیں بلکہ انہیں حل کرنے کی کاوشیں بھی کی ہیں ۔ ہمارا ماضی میں بھی شیخ آفتاب ، عبد القادر بلوچ سے ، حاصل بزنجو یہ گلہ شکوہ رہا ہے ،یہ وہ سیاسی اکابریں ہیں جن کے ساتھ ملک کی سیاست کے مد و جزر ساتھ گزارے ہیں ، جمہوریت کو قائم رکھنے کیلئے بڑی آئینی اصلاحاتی ترامیم ہم نے ساتھ کی ہیں ، ہم نے یہی بات کی ہے کہ ملک کا اصل مسئلہ یہ ہے کہ مشاورتی عمل مستقل قائم نہیں رکھا جاتا ہے، وفاقی اور صوبائی حکومت کو سیاسی اکائیوں کے ساتھ ایک مشاورتی عمل قائم رکھنا چاہئے ، اسی میں مقامی حکومتوں کا معاملہ ، ان کے وسائل اور اختیارات شامل ہیں ، سندھ میں طرز حکمرانی بھی ایک معاملہ ہے سندھ کی بڑی جماعت پیپلزپارٹی ہے اور ملک کی بڑی جماعت مسلم لیگ ن ہے ہم نے کھل کر کہا کہ آپ دونوں کی دوستی کی وجہ سے ہمیں بھگتنا پڑا ، چاہتے نہ چاہتے ہوئے یہاں جوکرپشن ہوئی ہے ، سپریم کورٹ کا فیصلہ اور پاناما کے معاملے کو جس طرح دیکھتے ہوں ہم نے تو اکراس دی بورڈ بات کی ہے ، صوبائی حکومت احتساب سے بھاگ رہی ہے سپریم کورٹ مسلم لیگ ن کے کیس کو دیکھ رہی ، مسلم لیگ ن کو سندھ حکومت کے احتساب کے عمل سے بھاگنے کو دیکھنا چاہئے ۔مسلم لیگ کا جو تعلق پی پی پی کے ساتھ رہا اس کی قیمت ایم کیوایم ، شہری اور دیہی علاقوں کے عوام نے چکائی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سیاسی جماعتوں میں مشاورتی عمل تسلسل کے ساتھ جاری رہنا چاہئے ، بنیادی اصلاحات کیلئے قومی ایجنڈا وضع ہونا چاہئے ، ایک منقسم مینڈیٹ ہے ، کرپشن کے 179میگا مقدمات ہیں ان پر بھی آگے بڑھنا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن نے اپنے معاملات رکھے ہیں باوجود اس کے کہ ہمارے گلے شکوے بہت ہیں اس کے باوجود پارلیمان میں سعد رفیق اور زبیر عمر کا رویہ اچھا رہا ہے ، آج بھی انہوں نے اپنی روایت کو قائم رکھا ہے ، ہم رابطہ کمیٹی کا اجلاس کرکے فیصلہ کریں گے اس کے بعد بتائیں گے ، ہم سمجھتے ہیں کہ یہ سیاسی عمل ہے اور اسے جاری رہنا چاہئے ۔
مسلم لیگ ن کے رہنما شیخ آفتاب نے کہا کہ ہم ایم کیوایم کے مشکور ہیں کہ انہوں نے ہمیں وقت دیا ، ، میئر کراچی کی جو ذمہ داریاں ہیں ان کے پاس اختیارات ہوں گے تو کام کریں گے ، میں مشکور ہوں کہ فاروق ستار بھائی کا کہ انہوں نے ہماری باتوں کو سنا ، ہم نے فیصلہ کیا ہے کہ انشاء اللہ آئندہ مل کر چلیں گے اور پاکستان کے معاملات کو آگے لیکر چلیں گے ۔
گورنرسندھ محمد زبیر عمر نے کہا کہ ایم کیوایم نے یہاں سے مثبت سیاست کے ذریعے کراچی اور حیدرآباد اور پاکستان کے عوام کیلئے بہتری آئے ، ایم کیوایم پاکستان کے ساتھ کمٹمنٹ کی ہے کہ وزیراعظم نے جو پیکیج دیا تھا اس پر تیزی سے عمل کرنے کی کوشش کررہے ہیں ، انہوں نے کہا کہ یم کیوایم پاکستان سندھ کے عوام کی نمائندہ جماعت ہے ،لوکل گورنمنٹ کراچی اور حیدرآباد کے عوام کی ہے ، کراچی اورحیدرآباددنیا کے بڑے شہر ہیں ، ہم نے حیدرآباد کراچی کے حوالے سے جن پیکیج کا اعلان کیا ہے اس پر کمٹمنٹ کا اعلان کررہے ہیں اور بہت جلد ان پر کام شروع کریں گے ، دنوں اور ہفتوں میں دیکھیں گے کہ یہاں بہت اعلانات ہوں گے ۔ یہ لانگ ٹرم کمٹمنٹ ہے ، ہم ایم کیوایم پاکستان کے ساتھ مل کر صوبے کو اور بہتربنائیں گے اورناانصافیوں کا ازالہ کریں گے ۔
*****

Tags: ,

More Stories From Feature News