Go to ...
Muttahida Quami Movement on YouTubeRSS Feed

ملک میں جمہوریت اورجمہوری نظام کوبچانے کے لئے کرداراداکرنے کی ضرورت ہے،ڈاکٹرمحمدفاروق ستار


ملک میں جمہوریت اورجمہوری نظام کوبچانے کے لئے کرداراداکرنے کی ضرورت ہے،ڈاکٹرمحمدفاروق ستار
متحدہ قومی موومنٹ(پاکستان)نے وزیراعظم پاکستان میاں محمدنوازشریف سے اخلاقی تقاضوں کے تحت مستعفی ہونے کامطالبہ کیا،ڈاکٹرمحمدفاروق ستار
سیاسی آئنیص بحران سنگین بحران کی صورتحال اختیارکرسکتا ہے جس کے نتیجے میں تصادم کی کیفیت پیدا ہوسکتی ہے جس کاملک کسی صورت میں متحمل نہیں ہوسکتا،ڈاکٹرمحمدفاروق ستار
جے آئی ٹی کی سپریم کورٹ میں رپورٹ اورنیب میں سیکشن9کے تحت ریفرنس جمع کرانے کی سفارش کے بعدان کاعہدے پررہنے کاکوئی اخلاقی جوازنہیں رہا،ڈاکٹرمحمدفاروق ستار
قانون اورآئین کے مطابق ریفرنس بھی چلے گااگرعدالت اعظمیٰ جے آئی ٹی کی سفارش کومنظورکرلے یہ معاملات علیحدہ ہیں لیکن پاکستان مسلم لیگ نوازکی مرکزی مجلس عاملہ فیصلہ کرے کہ حکمراں اپنے آپ کوحکومتی عہدوں سے علیحدہ کریں،ڈاکٹرمحمدفاروق ستار
انشاء اللہ2018ء کے عام انتخابات میں کراچی کے 40بقیہحلقوں میں ایم کیوایم پاکستان حیرت انگیزنتائج پیش کریگی،سیدفیصل سبزواری
شیخیاں سب بھگارتے ہیں حکومتوں سے لڑنے کا فن صرف ہمیں ایم کیوایم پاکستان کوآتاہے ،خواجہ اظہارالحسن
سربراہ ایم کیوایم پاکستان ڈاکٹرمحمدفاروق ستار،ارکان رابطہ کمیٹی سیدفیصل سبزواری اورخواجہ اظہارالحسن کی اراکین رابطہ کمیٹی کے ہمراہ پریس کانفرنس
کراچی:۔۔۔11، جولائی 2017ء
متحدہ قومی موومنٹ(پاکستان)کے سربراہ ڈاکٹرمحمدفاروق ستارنے وزیراعظم پاکستان میاں محمدنوازشریف سے مطالبہ کیاہے کہ وہ اخلاقی تقاضوں کوپورا کرتے ہوئے اپنے عہدے سے مستعفی ہوجائیں۔جے آئی ٹی کی سپریم کورٹ میں رپورٹ اورنیب میں سیکشن9کے تحت ریفرنس جمع کرانے کی سفارش کے بعدان کاعہدے پررہنے کاکوئی اخلاقی جواز نہیں رہا۔قانون اورآئین کے مطابق ریفرنس بھی چلے گااگرعدالت اعظمیٰ جے آئی ٹی کی سفارش کومنظورکرلے یہ معاملات علیحدہ ہیں لیکن پاکستان مسلم لیگ نوازکی مرکزی مجلس عاملہ فیصلہ کرے کہ حکمراں اپنے آپ کوحکومتی عہدوں سے علیحدہ کریں۔ڈاکٹرمحمدفاروق ستار نے کہاکہ جمہوری نظام کوبچانے کے لئے کرداراداکرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہاکہ ایسانہ کیاگیاتوسیاسی بحران سنگین صورتحال اختیارکرسکتا ہے جس کے نتیجے میں تصادم کی کیفیت بھی پیدا ہوسکتی ہے جس کاملک کسی صورت میں متحمل نہیں ہوسکتا۔ ڈاکٹر محمدفاروق ستارنے یہ بات ایم کیوایم(پاکستان) کے سینئرڈپٹی کنوینرمحمدعامرخان واراکین رابطہ کمیٹی کے ہمراہ بہادرآبادمیں پرہجوم پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔ڈاکٹر محمد فاروق ستارنے کہاکہ ہم اس پر تبصرہ نہیں کرناچاہتے کہ سپریم کورٹ میں جے آئی ٹی کی کیارپورٹ جمع ہوئی ہے ہم یہ سمجھتے ہیں کہ جوالزامات بار بارآرہے ہیں اورجس کے نتیجے میں یہ کہا جا رہا ہے کہ وزیراعظم اوران کے اہل خانہ پرمقدمہ بنناچاہیئے ہم یہ سمجھتے ہیں کہ کسی بھی حکومت کواعلی اخلاقی بنیادوں پراپنے عہدوں سے الگ ہوجاناچاہیئے۔ انہوں نے کہاکہ کرپشن کے خلاف احتساب کاایک موثراورجامع خودکفیل خودکارنظام اورقانون ہوناچاہئے جوبلا امتیازہرکرپشن کرنے والے کے خلاف کارروائی کرے۔چاہئے وہ ٹیکس چور ہوںیامنی لانڈرینگ کرنے والے یامنصوبوں میں کمیشن کھانے والے ،حکومت کے خزانے میں واجب الاادانہ دینا، اصل آمدنی چھپانا،ٹیکس بچانا،کالے دھندکوسفیدکرنے کے لئے ملک سے باہرلیجانااوروہاں سرمایہ کاری کرنابھی کرپشن ہے اس پربھی موثرقانون ہوناچاہئیے ۔ ڈاکٹرمحمدفاروق ستارنے کہاکہ آج ایک وزیراعظم سے استعفے کامطالبہ ہورہاہے احتساب کاموثرنظام انصاف اورقانون نہیں ہوگاتوپانچ سال بعدپھرہم کسی وزیر اعظم کے بارے میںیہی باتیں کررہے ہونگے۔ڈاکٹرمحمدفاروق ستارنے کہاکہ وزیراعظم کونیب سے خودتحقیقات کراناچاہیے تھیں اوربہترہوتاکہ وزیر اعظم اپنے اہل خانہ کونیب کے سامنے پیش کردیتے ۔انہوں نے کہاکہ ہرسیاسی جماعت اوراس کے رہنماء بھی اپنے دائیں بائیں دیکھیں وزیراعظم جس معاملے زیرتفتیش اورزیرتحقیق ہیں ان کرپٹ عناصرپربھی گہراتنگ ہوناچاہئے۔اللہ کے فضل وکرم سے متحدہ قومی موومنٹ واحدجماعت ہے جو حکومتوں میں شامل رہی ہیں اس کے منتخب اراکین اہم وزارتوں پرفائزرہے ہیں لیکن ہم پرایساکوئی کرپشن الزامات نہیں۔انہوں نے کہاکہ اس پربھی کارروائی ہونی چاہئے کہ ہزاروں ارب کے ریفرنسزاورمقدمات دیگرجماعتوں اورصوبائی حکومتوں پرہیں وہ بھی خودکو احتساب کے لئے پیش کریں ان ریفرنس پربھی کارروائی ہونی چاہئے۔ڈاکٹرمحمدفاروق ستار نے کہاکہ پارلیمانی اورسیاسی نظام اوراسمبلیاں موجودہیں پی ایم ایل (ن)کی مجلس عاملہ وزیراعظم کوعہدہ چھوڑنے کے بعداس نظام کوبچانے کے لئے فوری نوعیت کافیصلہ کرے ۔ ڈاکٹرمحمدفاروق ستارنے اعلان کیاکہ ہم پی ایس 114ہونے والی دھاندلی پرواضح ثبوتوں کو ساتھ پہلے سے داہرشدہ پیٹشن کوآگے بڑھانے جارہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہم نے جن خدشات اورتحفظات کااظہارکیاتھاوہ درست ثابت ہوئے ان پولنگ اسٹیشن سے حیرت انگیزطورپر1000،12سوووٹ دیکھائے گئے ایک سازش کے تحت مخصوص پولینگ اسٹیشنوں کے نتائج روک کر اچانک بھاری اکثریت سے جیتنے کااعلان کیاگیا۔ڈاکٹرمحمدفاروق ستارنے مطالبہ کیاکہ ان مخصوص پولینگ اسٹیشن میں انگوٹوں کے نشانات کی تصدیق کرلی جائے توحقیقی نتائج سامنے آجائیں گے۔ڈاکٹرمحمدفاروق ستارنے کہاکہ پیپلزپارٹی کے چار کارکنان جعلی ووٹ ڈالتے ہوئے گرفتارہوئے لیکن اس کی تحقیقات نہیں ہوئی کہ انہوں نے گرفتاری سے قبل کتنے ووٹ ڈالے۔ڈاکٹرمحمدفاروق ستارنے مطالبہ کیاکہ ان متنازعہ پولینگ اسٹیشن پردوبارہ پولینگ کاعمل کرایاجائے۔ انہوں نے کہاکہ ہم پیپلزپارٹی کے براہ راست متاثرکنندگان ہیں پیپلزپارٹی کی کرپشن پرایم کیوایم پاکستان نے وائٹ پیپربھی نکالاہے ان کے خلاف نیب کے پاس ان کے وزراء اور افسران اوردیگررہنماؤں کے خلاف کرپشن کے ریفرنسز موجودہیں اس پربھی مکمل قانونی کارروائی ہونی چاہئے۔ ایم کیوایم پاکستان کی رابطہ کمیٹی ورکن سندھ اسمبلی سیدفیصل سبزواری نے پاک سرزمین پارٹی کی جانب سے ایم کیوایم پاکستان کے لئے کہی جانے والی باتوں کامضحکہ خیزقراردیاہے۔انہوں نے کہاکہ تین حکومتوں اورایک بائیکاٹ کامردانہ وار مقابلہ کرتے ہوئے ہم نے دوحلقوں سے مجموعی طورپر34،ہزارووٹ حاصل کئے اورانشاء اللہ2018ء عام انتخابات میں کراچی کے بقیہ40حلقوں میں ایم کیوایم پاکستان حیرت انگیزنتائج پیش کریگی۔مختلف جماعتوں کی جانب سے پیشکشوں پرانہوں نے کہاکہ ہمارے دروازے ہرمحب وطن کے لئے کھلے ہیں اگرکوئی یہ جماعت یہ دعویٰ کرتی ہے کہ کسی کے بائیکاٹ کی اپیل یاخاموش رہنے سے ایم کیوایم پاکستان کو18ہزارووٹ ملے تووہ یادکریں کہ لاکھوں ریلی کے جواب میں ان کی ریلی میں صرف 2ہزارلوگ شامل تھے۔ سندھ اسمبلی میں قائدِحزب اختلاف ورکن رابطہ کمیٹی خواجہ اظہارالحسن نے کہاکہ شیخیاں سب بھگارتے ہیں حکومتوں سے لڑنے کا فن صرف ہمیں ایم کیوایم پاکستان کوآتاہے ،ہم مہاجرمینڈیٹ اورجدوجہدکے امین ہم ہیں۔شہیدوں کی ماؤں بہنوں کی حرمت ،اسیراورلاپتہ ساتھیوں کے لئے عملی جدوجہدصرف اورصرف ایم کیوایم پاکستان کررہی ہے۔انہوں نے کہاکہ کوئی پاک سرزمین پارٹی میں پی ایس114میں منظم دھاندلی اوربائیکاٹ کی مذمت کرنے بجائے اپنے سیاسی قدکے مطابق گفتگوکی۔انہوں نے کہاکہ’’ پی ایس پی نہ 3میں ہے 13میں‘‘ آپ کالوگ نام بھی بھول گئے ہیں اس لئے اس شہرکے خدائی فوجدارنہ بنیں۔

Tags: ,

More Stories From Top