Go to ...
Muttahida Quami Movement on YouTubeRSS Feed

مئی 12کے معاملے پرغیرجانبدارعدالتی کمیشن تشکیل دیاجائے،ڈاکٹرمحمدفاروق ستار


مئی 12کے معاملے پرغیرجانبدارعدالتی کمیشن تشکیل دیاجائے،ڈاکٹرمحمدفاروق ستار
ایم کیوایم 12مئی کی سب بڑی متاثرہ جماعت ہے جس کودہشت گردی کانشانہ بنایاگیا،ڈاکٹرمحمدفاروق ستار
ہم کل بھی پرامن ریلیوں پرتشددکرنے والے شرپسندوں کی مذمت کرتے تھے اورآج بھی کررہے ہیں
12مئی کے حقائق جاننے کے لئے عدالتی کمیشن بناچاہئے،ڈاکٹرمحمدفاروق ستارکی 12مئی کے شہداء کی برسی کے موقع پرمیڈیاکے نمائندگان سے بات چیت
2کراچی ۔۔۔ 12، مئی 2017ء
متحدہ قومی موومنٹ (پاکستان) کے کنوینر ڈاکٹر محمد فاروق ستار نے ایم کیوایم کے عارضی مرکز بہادر آباد میں ذرائع ابلاغ کے نمائندگان سے گفتگوکرتے ہوئے کہاکہ اس سے قبل کے میں12مئی2007ء کے واقعات پرایم کیوایم کے دیرینہ موقف کی وضاحت کروں میں ضروری سمجھتا ہوں کہ بلوچستان کے علاقے مستونگ میں دہشت گردی کے اس واقعے کی مذمت کروں جس میں جمعیت علمائے اسلام کے رہنماء عبدالغفورحیدری جو ڈپٹی چیئرمین سینٹ بھی ہیں ان کے قافلے پرحملہ ہواجس میں25افرادجاں بحق ہوئے اوردرجنوں زخمی ہیں۔اس واقعے میں شہیدہونے والے افرادسے تعزیت اور ان کے درجات کی بلندی کے لئے دعاگوہوں اورزخمیوں کی جلدصحت یابی کے لئے بھی دعاکرتاہوں۔یہ واقعہ بنیادی طورپروفاقی وزارت داخلہ، وفاقی حکومت اورصوبائی حکومتوں کی کوتاہی کانتیجہ ہے کیونکہ یہ ادارے نیشنل ایکشن پلان پراس کی روح اورمتن کے مطابق عمل کرنے سے قاصر ہیں لہٰذ اضرورت اس امرکی ہے کہ جہاں جہاں کوتاہیاں ہیں اسے دورکیاجائے اوردہشت گردی کے خلاف جوابی بیانیہ تشکیل دیا جانا چاہئے۔ مدرسوں اور تعلیمی نصاب سمیت جہاں جہاں ضرورت ہے اصلاحات متعارف کرانی چاہئے۔ ڈاکٹر محمد فاروق ستارنے اس موقع پر12مئی 2007ء کے واقعات پرتبصرہ کرتے ہوئے کہاکہ اس موضوع پرسیاسی جماعتیں صرف پوائنٹ اسکورینگ تک محدودہیںیہ قومی تاریخ کاایک برادن تھابلکہ اس کوقومی المیہ کہاجائے توغلط نہ ہوگا۔اس روزایم کیوایم کے 14کارکنان سمیت 48قیمتی جانیں تلف ہوئی ۔انہوں نے کہاکہ ہم کل بھی پرامن ریلیوں پر تشدد کرنے والے شرپسندوں کی مذمت کرتے تھے اورآج بھی کررہے ہیں۔12مئی کے حقائق جاننے کے لئے عدالتی کمیشن بننا چاہئے۔ یہ ایم کیوایم کامطالبہ رہاہے اس موقع پرڈاکٹرمحمدفاروق ستارنے مزیدکہاکہ 12مئی 2007ء کے واقعات پرایک کمیٹی بننی تھی جس کی رپورٹ بھی مرتب ہوئی تھیں اور ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ اس رپورٹ کوفی الفورشائع کیاجائے ایم کیوایم 12مئی کی سب سے بڑی متاثرہ جماعت ہے جس کو دہشت گردی کا نشانہ بنایا گیا۔ اگراس رپورٹ سے ایم کیوایم سمیت تمام متاثرفریقین مطمئن نہ ہوں توایک اورعدالتی کمیشن قائم کیاجائے اور12مئی2007ء کے شرپسندوں، دہشت گردوں اورقاتلوں کوانصاف کے کٹہرے میں لایاجائے،48قیمتی جانوں کے ساتھ انصاف اسی وقت ممکن ہوگاکہ جب ان کے قاتل انصاف کے کٹہرے میں لائیں جائیں،پوائنٹ اسکورینگ سے انصاف کے تقاضے پورے نہیں ہوتے،ہم یہ سمجھتے ہیں کہ جولوگ 10سالوں سے اسے مسئلے پرسیاست کررہے ہیں وہ انصاف کامذاق اڑارہے ہیں،قانون کی دھجیاں بکھررہے ہیں۔اس موقع پرانہوں نے کہاکہ 12مئی 2007ء کی ریلی کی قیادت میں خودکررہاتھااورجب یہ ریلی مزارقائدپرپہنچی تویہ اطلاع آئی کہ پٹیل پاڑہ پرگھات لگائے دہشت گردوں نے فائرنگ کی جس سے ہمارے چار کارکنان شہیدہوئے اوردرجنوں زخمی ہوئے اوراس کے ساتھ مختلف پلوں اورٹولیوں کی شکل میں موجودشرپسندوں نے قتل عام کیااورایم کیو ایم کے 14 کارکنان سمیت 48افرادجاں بحق ہوئے۔اس موقع پرڈاکٹرمحمدفاروق ستارنے دعوت دی کہ جس جس سیاسی جماعت کانقصان ہواہے 12مئی کو وہ اپنے جاں بحق افراداورزخمی افرادکی فہرست فراہم کرے اورعدالتی کمیشن میں پیش ہو۔ صرف ایم کیوایم کے 100سے زائدرہنماؤں پرجس میں مئیر کراچی وسیم اختربھی شامل ہیں مقدمات قائم کئے گئے ہیں ہم مقدمات کاسامناکرنے کوتیارہیں اور وہ کھلی عدالتوں میں چلائے جائے،صرف جھوٹے اورمن گھڑت الزام لگاکرانصاف کے تقاضے پورے نہیں ہوتے لہٰذاقاتلوں اورمجرموں کوانصاف کے کٹہرے میں لاکرانصاف کے تقاضے پورے کئے جاسکتے ہیں۔ آج سے 10برس قبل ہماراجومؤقف تھاآج بھی وہی ہے۔

Tags: ,

More Stories From Top