Go to ...
Muttahida Quami Movement on YouTubeRSS Feed

ملک بھرمیں خانہ ومردم شماری کے جاری عمل میں کراچی کے اولڈسٹی ایریازسمیت بیشترعلاقوں اوربلاکس میں تیسرے اور آخری دن متعلقہ عملے کے نہ پہنچنے اورخانہ شماری کاکام مکمل نہ کرنے کی اطلاعات پررابطہ کمیٹی ایم کیوایم (پاکستان)اظہار تشویش


ملک بھرمیں خانہ ومردم شماری کے جاری عمل میں کراچی کے اولڈسٹی ایریازسمیت بیشترعلاقوں اوربلاکس میں تیسرے اور آخری دن متعلقہ عملے کے نہ پہنچنے اورخانہ شماری کاکام مکمل نہ کرنے کی اطلاعات پررابطہ کمیٹی ایم کیوایم (پاکستان)اظہار تشویش
کراچی کے اکثریتی آبادی میں مقررہ وقت میں خانہ شماری کاکام نہ ہونے سے خانہ شماری اورمردم شماری کاپوراعمل مشکوک کردیاہے ،رابطہ کمیٹی ایم کیوایم پاکستان
سپریم کورٹ کے کہنے پرملک بھرمیں15مارچ سے شروع ہونے والی خانہ ومردم شماری میں خانہ شماری کاکام مکمل کرنے کے لئے تین دن کاوقت دیاگیا،رابطہ کمیٹی ایم کیوایم پاکستان
پہلے ہی فلیٹس ،کثرالمنزلہ عمارات،دکانوں اور کارخانوں پرالگ الگ(ش)ڈالنے کے بجائے طریقہ کارکوتبدیل کرکے صرف ایک (ش)ڈالاجارہاہے
دوسری جانب کراچی کے بیشترعلاقوں اوربلاکس میں سرئے سے خانہ شماری کا کام ہی نہیں کیا جاسکا جو کراچی اوراس کے عوام کے ساتھ سراسر ظلم وزیادتی اورکراچی کی آبادی کم کرنے کی گھناؤنی سازش ہے،رابطہ کمیٹی ایم کیوایم پاکستان
کراچی کے بیشترعلاقوں اوربلاکس میں خانہ شماری کاکام مکمل نہ کرنے کانوٹس لیاجائے،رابطہ کمیٹی
خانہ ومردم شماری کوشفاف بنانے کے لئے کراچی کے ایک ایک محلے،گلی اورگھر،دکان اوردیگرکاروباری مراکزپرخانہ شماری کاعمل مکمل کرایاجائے اورعوام میں پائی جانے والی بے چینی کاختم کیاجائے،رابطہ کمیٹی ایم کیوایمپاکستان

کراچی ۔۔۔ 17، مارچ 2017ء
متحدہ قومی موومنٹ (پاکستان)کی رابطہ کمیٹی نے ملک بھرمیں خانہ ومردم شماری کے جاری عمل میں کراچی کے اولڈسٹی ایریازسمیت بیشترعلاقوں اوربلاکس میں تیسرے اورآخری دن متعلقہ عملے کے نہ پہنچنے اورخانہ شماری نہ کرنے کی اطلاعات پرگہری تشویش کااظہارکیاہے اورکہاہے کہ کراچی کے اکثریتی علاقوں اوربلاکس میں مقررہ وقت میں خانہ شماری کاکام نہ ہونے سے خانہ شماری اورمردم شماری کاپوراعمل مشکوک کردیاہے ۔ایک بیان میں رابطہ کمیٹی نے کہاکہ سپریم کورٹ کے کہنے پرملک بھرمیں15مارچ سے شروع ہونے والی خانہ ومردم شماری میں خانہ شماری کے لئے تین دن کاوقت دیاگیااوراس سلسلے میں متعلقہ عملے کے اہلکارتمام گھروں،فلیٹوں،دکانوں،کار خانوں اوردیگرکاروباری مرکزپر (ش) کانمبرڈالنے کاعمل پوراکرتے جس کے بعدمردم شماری(افرادکی گنتی )کاعمل شروع کیاجاناتھاتاہم اولڈسٹی ایریازعثمان آباد،لیاری،پاک کالونی،پراناگولیمار،اورنگی ٹاؤن، سائیٹ میٹرول بلاک 1,2,3،اسکیم33گلشن معمار ،گلشن اقبال 13-D2ربی اپارٹمنٹ، سرجانی ٹاؤن،نیوکراچی،فیڈرل بی ایریا،لیاقت آبادیوسی40،نارتھ کراچی سیکٹر 11-L اور11-B،گلشن اقبال بلاک11،کورنگی نمبرڈھائی ایریا33-C،ملیرٹاؤن، ماڈل کالونی،شاہ فیصل کالونی،محمودآباد،عظم بستی،گلستان جوہربلاک15اور17،قصبہ علیگڑھ اورجمشید کواٹرزکے مختلف بلاکس سمیت کراچی کے بیشترعلاقوں اوربلاکس میں عملہ سرئے سے پہنچاہی نہیں جس کے
باعث ان علاقوں اوربلاکس میں خانہ شماری کے کام نہیں ہوسکا اورخانہ ومردم شماری کاسارا عمل مشکوک ہوکررہ گیاہے۔ رابطہ کمیٹی نے کہاکہ ایک جانب پہلے ہی فلیٹس ،کثرالمنزلہ عمارات،دکانوں اور کارخانوں پرالگ الگ(ش)ڈالنے کے بجائے طریقہ کارکوتبدیل کرکے صرف ایک (ش)ڈالاجارہاہے جبکہ فلیٹس ، عمارات میں کئی کئی گھرانے رہائش پذیرہیں جبکہ دوسری جانب کراچی کے بیشترعلاقوں اوربلاکس میں سرئے سے خانہ شماری کا کام ہی نہیں کیا جاسکا جو کراچی اوراس کے عوام کے ساتھ سراسر ظلم وزیادتی اورکراچی کی آبادی کم کرنے کی گھناؤنی سازش ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔رابطہ کمیٹی ایم کیوایم (پاکستان) نے چیف شمارت آصف باجوہ، وفاقی وزیرخزانہ اسحاق ڈارسے مطالبہ کیاکہ کراچی کے بیشترعلاقوں اوربلاکس میں خانہ شماری کاکام مکمل نہ کرنے کانوٹس لیتے ہوئے خانہ ومردم شماری کوشفاف بنانے کے لئے کراچی کے ایک ایک محلے،گلی اورگھر،دکان اوردیگرکاروباری مراکزپرخانہ شماری کاعمل مکمل کرایاجائے اورعوام میں پائی جانے والی بے چینی کاختم کیاجائے۔
*****

Tags:

More Stories From Urdu News